Blog

Suno Yahan Koi Masla Hai Tumhari Awaaz Kat Rhi Hai by Tehzeeb Hafi Urdu Hindi Poetry

Suno Yahan Koi Masla Hai Tumhari Awaaz Kat Rhi Hai by Tehzeeb Hafi Urdu Hindi Poetry
Suno Yahan Koi Masla Hai Tumhari Awaaz Kat Rhi Hai by Tehzeeb Hafi Urdu Hindi Poetry

سُنویہاں کوئی
مسلہ ہے تمہاری آواز کٹ رہی ہے

کسے خبر ہے کہ عمر بس اس پہ غور کرنے پہ کٹ رہی ہے

کہ یہ اُداسی ہمارے جسموں سے کس خوشی میں لپٹ رہی ہے

عجیب دُکھ ہے ہم اُس کے ہو کر بھی اُس کو چھونے سے ڈر رہے
ہیں

عجیب دُکھ ہے ہمارے حصے کی آگ اوروں میں بٹ وہی ہے

میں اُس کو ہر روز بس یہی ایک جھوٹ سننے کو فون کرتا

سُنویہاں کوئی مسلہ ہے تمہاری آواز کٹ رہی ہے

سو اس تعلق میں جو غلط فہمیاں تھیں دور ہور ہی ہیں

روکی ہوئی گاڑیوں کے چلنے کا وقت ہے دُھند چھٹ رہی ہے

 

تہذیبؔ حافی

 

Kissey khabar hai k umer bas as pe ghor karney pey kat
rhi hai

K yeh uddassi hamare jismoon sey kis kushi mein lipat rhi
hai

Ajeeb dukh hai hum us k ho kar bhi us ko chohney sey dar
rhe hain

Ajeeb dukh hai hamare hissey ki aag aoroon mein bat rhi
hai

Main us ko her rooz bas yehi aik jhoot sunney kop hon karta

Suno yahan koi masla hai tumhari awaaz kat rhi hai

So is tahluq mein jo ghalat fehminaan thin door ho gai
hain

Ruki hui gaarioon k chalney ka waqt hai dhondh chat chuki
hai

 

TEHZEEB HAFI

FOR MORE OF TEHZEEB HAFI

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker