Blog

Muhabbat Ab Nahi Ho G Urdu Sad Poetry By Majid Jahanghir

Muhabbat Ab Nahi Ho G Urdu Sad Poetry By Majid Jahanghir
Muhabbat Ab Nahi Ho G Urdu Sad Poetry By Majid Jahanghir

محبت اب نہیں ہو
گی



دلِ ناداں یقیں کر لے محبت اب نہیں ہو گی

قیامت آچکی ہم پر قیامت اب نہیں ہو گی

جسے اپنا بنانا تھا جو رگ رگ میں سمایا تھا

بہت بے درد نکلا وہ سو چاہت اب نہیں ہو گی

میرا بے سود ہے جینا جہانِ درد میں تنہا

مجھے سانسوں کی اے ہمدم ضرورت اب نہیں ہو گی

مجازی عشق میں کھو کر حقیقت بھول بیٹھا تھا

خدایا درگزر کرنا شکایت اب نہیں ہو گی

مذاہب کے تصادم نے خدا کو تقسیم کر ڈالا

کہیں مندر کہیں گرجا عبادت اب نہیں ہو گی

بیاں ایسے نہ کر ماجدؔ زمانے کی حقیقت کو

وگرنہ جان کی تجھ سے حفاظت اب نہیں ہو گی

 

ماجدؔ جہانگیر

 



Dil e nadaan yakeen kr ley muhabbat ab nahi ho g

Qayamat aa chuki hum pr qayamat ab nahi ho g

Jissey apna banaya ha jo rag rag mein samaya tha

Buhat bey dard nikla woh chahat ab nahi ho g

Mera be soud hai jeena jahan e dard mein tanha

Mujhe sansoon ki aey humdam zarorat ab nahi ho g

Majazi ishq mein kho kar haqeeqat bhool betha tha

Khudaya dar guzar karna shikayat ab nahi ho g

Mazahib k tasadum ne khuda ko taqseem kr dala

Kahin mandir kahin girja ibadat ab nahi ho g

Biyan aisey na kr “majid” zamaney ki haqeeqat ko

Wagarna jaan ki tujh se hifazat ab nahi ho g

 

MAJID JAHANGHIR

 

FOR MORE

 

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker