Blog

Woh Bulaein Tu Kya Tamasha Ho Saghar Siddiqui Urdu Sad Poetry

Woh Bulaein Tu Kya Tamasha Ho Saghar Siddiqui Urdu Sad Poetry
Woh Bulaein Tu Kya Tamasha Ho Saghar Siddiqui Urdu Sad Poetry

 




وہ بُلائیں تو
کیا تماشہ ہو

وہ بُلائیں تو کیا تماشہ ہو

ہم نہ جائیں تو کیا تماشہ ہو

یہ کناروں سے کھیلنے والے

ڈوب جائیں تو کیا تماشہ ہو

بندہ پرور جو ہم پہ گُزری ہے

ہم بتائیں تو کیا تماشہ ہو

آج ہم بھی تری وفاؤں پر

مسکرائیں تو کیا تماشہ ہو

تیری صورت جو اتفاق سے ہم

بُھول جائیں تو کیا تماشہ ہو

وقت کی چند ساعتیں ساغرؔ

لوٹ آئیں تو کیا تماشہ ہو

 

ساغرؔ صدیقی

 

Woh bulaein tu kya tamasha ho

Hum na jaein tu kya tamasha ho

Yeh kinaroon se khilney waley

Dhoob jaein tu kya tamasha ho

Banda parwar jo hum pe ghuzri hai

Hum bataein tu kya tamasha ho

Aaj hum bhi teri wafaoon par

Muskuraein tu kya tamasha ho

Teri surat jo ittifaq se hum

Bhool jaein tu kya tamasha ho

Waqt ki chand saatein “SAGHAR”

Laut ayein tu kya tamasha ho

 

SAGHAAR SIDDIQUI

FOR MORE

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker