Blog

Woh Log Mere Buhat Pyar Karney Wale Thy Jamal Ehsani Urdu Sad Poetry

Woh Log Mere Buhat Pyar Karney Wale Thy Jamal Ehsani Urdu Sad Poetry
Woh Log Mere Buhat Pyar Karney Wale Thy Jamal Ehsani Urdu Sad Poetry




وہ لوگ میرے بہت
پیار کرنے والے تھے

وہ لوگ میرے بہت پیار کرنے والے تھے

گزر گئے ہیں جو موسم گزرنے والے تھے

نئی رُتوں میں دکھوں کے بھی سلسلے ہیں نئے

وہ زخم تازہ ہوئے ہیں جو بھرنے والے تھے

یہ کس مقام پہ سوجھی تجھے بچھڑنے کی

کہ اب تو جا کہ کہیں دن سنورنے والے تھے

تمام رات نہایا تھا شہر بارش میں

وہ رنگ اُتر گئے جو اُترنے والے تھے

اُس ایک چھوٹے سے قصبے پہ ریل ٹھہری نہیں

وہاں بھی چند مسافر اُترنے والے تھے

 

جمال ؔ احسانی

 

Woh log mere buhat pyar karney wale thy

Ghuzar gye hain jo mousam ghuzarney wale thy

Nai ruton mein dukhoon ke bhi silsiley hain nae

Woh zakham taza hue hian jo bharney wale thy

Yeh kis muqaam pe sujhi tujhe bicharney ki

K ab tu ja k kahin din sanwarney wale thy

Tamam raat nahaya tha sheher barish mein

Woh rung uter hi gye jo uterney wale thy

Us ek chotey se qasbey pe rail thehri nahi

Wahan bhi chand musafir utarney wale thy

 

JAMAL EHSANI

FOR MORE

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker