Blog

Waise Main Ne Duniya Main Kia Dekha Ha Tehzeeb Hafi Urdu Hindi Poetry Lyrics

 

Waise Main Ne Duniya Main Kia Dekha Ha

Tum Kehte Ho Tu Phir Acha Dekha Ha

Main Osko Apni Wehshat Tuhfey Main Dun

Hath Uthaye Jis Ne Sehra Dekha Ha

Bin Dekhe Os Ki Tasweer Bna Lun Ga

Aj Tu Ma Ne Os Ko Itna Dekha Ha

Aik Nazar Main Manzar Kab Khiltey Hain Dost

Tun Ne Dekha Bhi Ha Tu Kia Dekha Ha

Ishaq Main Banda Mar Bhi Sakta Main Ne

Dil Ki Dastaweez Main Likha Dekha Ha

Main Tu Ankhain Dekh Ke He Batla Dun Ga

Tum Main Se Kis Kis Ne Dariya Dekha Ha

Agey Sedhy Hath Pe Aik Tarai Ha

Main Ne Pehle Bhi Ye Rasta Dekha Ha

Tum Ko Tu Es Baag Ka Pata Ho Ga

Tum Ne Tu Es Shahir Ka Naqsha Dekha Ha

ویسے میں نے دنیا میں کیا دیکھا ہے

تم کہتے ہو تو کچھ اچھا دیکھا ہے

میں اس جو اپنی وحشت تحفے میں دوں

ہاتھ اٹھائے جس نے صحرا دیکھا ہے

بن دیکھے اس کی تصویر بنا لو گا

آج تو میں نے اسے اتنا دیکھا ہے

ایک نظر میں منظر کب کھلتے ہیں دوست

تو نے دیکھا بھی ہے تو کیا دیکھا ہے

عشق میں بندہ مر بھی سکتا ہے میں نے

دل کی دستاویز میں لکھا دیکھا ہے

میں تو آ نکھیں دیکھ کر بتلا دوں گا

تم میں سے کس کس نے دریا دیکھا ہے

آگے سیدھے ہاتھ پہ ایک ترائی ہے

میں نے پہلے بھی یہ رستہ دیکھا ہے

تم کو تو اس باغ کا پتہ ہو گا

تم نے تو اس شہر کا نقشہ دیکھا ہے

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button

Adblock Detected

Please consider supporting us by disabling your ad blocker